تحریر : رہنمائے زندگی

تاریخ شائع 03-06-2021, تصنیف کردہ : فاریہ علی (Fariya)
درجہ بندی:

رہنمائے زندگی, رہنمائے زندگی. رہنمائے زندگی

 

رہنمائے زندگی 🥰 

ازقلم فاریہ علی🍂

میں غموں میں پلنے والی بنت حوا ایک عرصے سے کسی رہنما کی منتظر ہو جو آکر مجھ سے نہ سوال پوچھے کہ اے پاگل لڑکی کیوں غموں میں پیوست رہی کیوں ان ہرنی جیسی آنکھوں کو تکلیف دی میں ایک ایسے رہنماء کی منتظر ہوں جو مجھے عزت دے نہ کہ ان ریتی رواجوں لوگوں جیسا ہو جن کا جب دل کرا بھری محفل میں تزلیل کے دو گھونٹ پلا دیےمیں ایک ایسے رہنماء کی منتظر ہو جو مجھے آ کر راہ راست پر لے آئے جو مجھے راہ راست دکھائے میری آنکھیں ایسے رہنما کے انتظار میں ہیں جو مجھے مسکرا کر بولے تم سجا کرو فقط میرے لیے جو میرے وجود کو عزت کی چادر اوڑھا دے  ایک ایسا رہنما ہوں جو اپنے آب و تاب کے جلوہ افروزں سا  ہو جس کے سائے میں دھوپ کی تپش مجھے قدرے کم لگے ایک ایسا جانثار رہنما جس کے ساتھ چلتے میں خود کو مکمل و مضبوط محسوس کروں جو میری ڈھال ہو ایسا شجاعت مند ہو جو میری طرف میلی آنکھ سے دیکھے اس کی آنکھیں نکال کر ہتھیلی پر رکھ دینے کی ہمت رکھتا ہوں ایسا پروقار ہو جو مجھے اپنی انا کے سائے میں ڈھال لے ایسا رہنما جو میرے دل کے دریچوں میں سما گیا ہوں ایسا رہنما جو مجھے پختگی کا احساس دلائے نہ کہ میرے خوابوں پر مہر ضبط لگا دے نہ کہ مجھے ریت رواجوں کی چادر اوڑھا کر کونے میں سجا دے میں رہنما کی خواہش رکھتی ہوں شوہر کے روپ میں جو فقط میرا ہو کیوں کہ مجھے رہنما میں شراکت پسند نہیں.

تعارف : فاریہ علی

  سفر زندگی آسان نہیں ہے لوگوں کے دیے ہوئے دکھ درد تکلیف حد سے تجاوز کر جائے تو انوکھی صورت اختیار کر جاتے ہیں اور پھر اختیار آپ کے پاس ہیں اس کو طاقت بنا لیں اور پہلے سے زیادہ طاقتور ہو کر لوگوں کے سامنے امٹ کرائیں یا پھر آپ  ہتھیار ڈال دے زندگی کے سامنے گھٹنے ٹیک دیں میرا نام فاریہ علی ہے 2002میں سیال  راجپوت گھرانے میں آنکھ کھولی قدر مطلق کا احسان کے اسلامی گھر آنے میں اس روح ازل کو بھیجا لکھنے کا شوق تو شروع سے ہی تھا کچھ کرم اپنوں نے اور لوگوں نے کیا کہ اس نے باقاعدگی سے ایک صورت اختیار کرلی 2017 سے لکھنے کا آغاز کیا بس صحیح انسان کی تلاش تھی جو میرے ہنر کو پہچان کر اس چیز کو عملی جامہ پہنائے.

متعلقہ اشاعت


تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

تحریر

اس تحریر کے بارے میں اپنی رائے نیچے کمنٹ باکس میں لکھیں